سماجی دوری میں مشینوں کا سہارا، روبوٹ کافی بنانے لگے

جنوبی کوریا میں میں گاہکوں کو حیرت انگیز صورتحال کا سامنا کرنا پڑا جب کیفے مالکان نے کافی بنانے اور سرو کرنے کے لیے روبوٹ کو استعمال شروع کر دیا
کرونا وائرس کے عروج کے دوران کوریا بہت زیادہ متاثرہ ملک تھا لیکن اپنی زبردست ٹیسٹنگ صلاحیت اور عوامی شعور کے باعث بہت جلد مریضوں کی تعداد میں واضح کمی نظر آئی
کوریا نے اسی سلسلے میں جدید ٹیکنالوجی کا استعمال شروع کیا ہے اور روبوٹس مختلف کاروباری سرگرمیاں سرانجام دے رہے ہیں جیسا کہ کیفے میں لوگوں کو کافی ویٹر یا ویٹریس کی بجائے روبوٹ کافی سرو کر رہے ہیں

کیٹاگری میں : صحت

اپنا تبصرہ بھیجیں