ٹک ٹاک کے مقابلے میں ایپ، ویڈیو دیکھنے پر پیسے بھی ملیں گے

شارٹ ویڈیوز پر مبنی چینی ایپس میں دوڑ
جاری ہے جبکہ اب اس کی بازگشت امریکہ تک جا پہنچی ہے۔ معروف ایپ ٹک ٹاک کو نئی ا آنے والی ایپلیکیشن زن سے سخت مقابلے کا سامنا ہے۔ وہ بھی ایسی صورت مین جب نئی ایپ ویوورز کو ویڈیو دیکھنے کے پیسے بھی دے رہی ہے۔

زن ایپ تیار کرنے والی کمپنی کوائشو چائنا میں ویڈیو ایپلیکیشن بنانے والی دوسری سب سے بڑی کمپنی ہے۔ اسی سال مئی میں منظر عام پر آنے والی یہ ایپ ایک ماہ بعد ہی امریکہ میں مفت دستیاب مشہور ایپ بن چکی ہے۔

یہ ایپ ٹک ٹاک سے ملتی جلتی ہے اور یہ ویوورز کو مسلسل شارٹ ویڈیوز دیکھنے کی سہولت دیتی ہے۔ لیکن ٹک ٹاک جیسا کہ صرف تفریح کے لیے ہے جبکہ زن امریکہ اور کینیڈا کے صارفین کے لیے دوستوں کی بھیجی جانے والی فالو یا جوائن ریکویسٹ پر 20 ڈالرز تک کریڈٹ دیتی ہے۔ اسی طرح ایپلیکیشن پر صارفین کو ویڈیوز دیکھنے کے پوائنٹس بھی دیے جاتے ہیں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں