وادی گلوان چین کی ہے، بھارتی فوج کا پراپیگنڈہ ناکام رہے گا- چینی ترجمان

چینی وزارت خارجہ کے ترجمان ژو لیجان نے چین اور بھارت کے درمیان ہونے والی سرحدی جھڑپ اور اس کے نتیجے میں بھارتی فوجیوں کی ہلاکت کے بعد مزید حقائق سے پردہ اٹھاتے ہوئے کہا ہے وادی گلوان چین کی ہے اور یہاں کسی قسم کا کی دخل اندازی برداشت نہیں کی جائے گی-

 انہوں نے بھارت کو تنبیہہ جاری کرتے ہوئے کہا ہے کہ بھارت کی ایل اے سی کی حدبندی کو تبدیل کرنے کی کسی بھی کوشش کا منہ توڑ جواب دیا جائے گا-

ترجمان نے مزید کہا کہ بھارتی فوج کا بھانڈا پھوٹ چکا ہے اور کسی قسم کے پراپیگنڈے کو پنپنے  کی سعی ناکام رہے گی-

 دونوں ملکوں کی فوج کے درمیان تصادم کے بارے میں مزید تفصیل بتاتے ہوئے ترجمان کا کہنا تھا کہ بھارت نے سرحد کے پار یکطرفہ طور پر تعمیرات کی ہیں اور چینی فوج کو اشتعال دلایا ہے- بھارتی فوج نے 15جون کو وادی گلوان میں داخل ہونے کی کوشش کی جب چینی افسران نے انہیں روکنے کی کوشش کی تو بھارتی فوجیوں  نے 

جارحانہ انداز اپناتے ہوئے چینی فوجیوں پر حملہ کیا جس کا بھرپور جواب دیا گیا-

 قیدی بنائے گئۓ تمام بھارتی فوجیوں کو رہا کر دیا گیا ہے- بھارت پر یہ واضح کر دیتے ہیں کہ وادی گلوان پوری کی پوری چین کی ہے اور چین اپنی زمین پر کسی بھی قسم کی جارحیت کو برداشت نہیں کرے گا-

اپنا تبصرہ بھیجیں