کورونا کی نئی علامات کونسی ہیں؟

عالمی وبا کرونا  میں مبتلا ہونے کی علامات عام طور پر بخار، کھانسی، سانس لینے میں دشواری، جسم میں درد یا گلے کی سوزش کے بارے تو آپ کو معلوم ہو گیں- لیکن اب طبی ماہرین نے کرونا وائرس کی کچھ اور علامات کی نشاندہی بھی کی ہے-

تفصیلات کے مطابق موذی وباء پر گہری نظر رکھنے والے ماہرین کے مطابق ناک کا بہنا، دست و پیٹ میں مروڑ اور متلی کو بھی کرو نا علامات کی فہرست میں شامل کیا گیا ہے- 

عالمی میڈیا کے مطابق اب یہ علامات  بھی متاثرہ شخص میں موجود ہونے کی صورت میں اسے کرونا وائرس تشخیصی مراکز سے رجوع کرنا چاہیے- 

ماہرین نے کہا ہے کہ ہر شخص میں کرونا کی علامات کی شدت مختلف ہوسکتی ہے اور عام طور پر یہ علامات ظاہر ہونے میں 2 سے 14 دن کا عرصہ لگ سکتا ہے اسی لئے عام طور پر قرنطینہ کے لیے بھی دو ہفتوں کا وقت ہی متعین کیا جاتا ہے- 

وائرولوجسٹ کے مطابق دائمی امراض میں مبتلا افراد یا عمر رسیدہ لوگ جو پہلے ہی کسی عارضے میں مبتلا ہوں کرو نا کا خاص طور پر نشانہ بنتے ہیں اور قوت مدافعت کم ہونے کے باعث کرونا شدت سے متاثرہ شخص کیلیے جان لیوا مرض کی شکل اختیار کر لیتا ہے- 

اسی طرح بیان کردہ علامات میں سے اگر کوئی بھی علامت ہو تو فوری طور پر الگ جگہ پر منتقل ہو جائیں اور جلد از جلد ہسپتال سے رجوع کریں-

واضح رہے کہ دنیا بھر میں اب تک کرونا وائرس کے 9,796,064 مریض سامنے آ چکے ہیں اور اس کی تباہ کاریاں تاحال جاری ہیں- 

اپنا تبصرہ بھیجیں