کراچی سٹاک ایکسچینج پر حملہ ناکام، متعدد دہشتگردوں کا صفایا

صوبہ سندھ کے دارلحکومت اور پاکستانی معیشیت کے مرکزی حب کراچی میں پاکستان اسٹاک ایکسچینج پر آج صبح دہشت گروں کا حملہ ناکام بنا دیا گیا ہے- قانون نافذ کرنے والے اداروں نے تمام دہشت گروں کا صفایا کردیا ہے، جبکہ فائرنگ کے تبادلے میں ایک پولیس اہلکار سمیت 4 سیکیورٹی گارڈ بھی شہید ہوگئے ہیں۔ کوئی بھی دہشتگرد سٹاک ایکچینج کے احاطے میں داخل نہیں ہوسکا-

سندھ رینجرز کے ترجمان نے بتایا ہے کہ بزدلانہ حملے میں تمام دہشت گردوں کو ہلاک کر دیا گیا ہے، تاہم اب کلیئرنس آپریشن جاری ہے، جس میں کچھ وقت لگ سکتا ہے اس سلسلے میں بی ڈی ایس کے عملے کو طلب کرلیا گیا ہے۔ اور عمارت کو جلد کلیئر کر دیا جائے گا-

کراچی پولیس کے مطابق سوموار کی صبح تقریبا 10 بجے کے قریب 4 دہشتگردوں نے پہلے کراچی اسٹاک ایکسچینج کے مین گیٹ پر دستی بم سے حملہ کیا تھا اور پھر اندھا دھند فائرنگ شروع کردی تھی۔ اور مین بلڈنگ میں داخلے کی کوشش کی-

ڈپٹی انسپیکٹر جنرل ساوتھ کا بتایا ہے کہ یہ دہشت گرد جس وہیکل میں سوار ہو کر آئے تھے اسے بھی پولیس نے تحویل میں لے لیا ہے، اور گاڑی مبینہ طور پر چوری کی گئی ہے- پولیس حکام کے مطابق دہشت گردوں کی فائرنگ سے 2 افراد بھی جاں بحق ہوئے ہیں۔ جبکہ زخمیوں کی تعداد 7 بتائی گئی ہے-

سینئر سپریٹینڈنٹ سٹی پولیس مقدس حیدر نے میڈیا کو بتایا کہ دہشتگردوں کی فائرنگ سے ایک پولیس اہلکار اور 4 سیکیورٹی گارڈ شہید ہوئے ہیں، جبکہ سول اسپتال میں 7 زخمیوں کو منتقل کیا گیا ہے۔ مزید امدادی کاروائیاں جاری ہیں-

ایس ایس پی مقدس حیدر نے مزید بتایا کہ دہشتگردوں کی فائرنگ سے ہمارا ایک پولیس اہلکار زخمی بھی ہوا ہے جسے ہسپتال میں طبی امداد دی جارہی ہے- اور اس کی حالت خطرے سے باہر بتائی جارہی ہے-

اپنا تبصرہ بھیجیں