کار شو رومز کھلنے کے باوجود گاہک ندارد

لاہور ميں لاک ڈاون کی وجہ سے 2 ماہ بند رہنے والے کار شو روم کھلنے کے باوجود بھی گاہکوں کے منتظر ہیں۔

جبکہ دوسری طرف لاک ڈاون کے باعث گاڑیوں کی قیمتوں میں ہوش ربا اضافہ دیکھا گیا ہے۔

وہیکل ڈیلر ایسوی ایشن کا کہنا ہے کہ اگر حکومت بجٹ میں ایف ای ڈیوٹی ختم کرے تو بڑی اور چھوٹی وہیکلز کی قیمتوں میں کافی بڑی کمی ہو سکتی ہے۔

ایسوی ایشن نے وفاقی بجٹ ميں کم سی سی گاڑیوں کی امپورٹ سہل بنانے کی درخواست بھی کی ہے۔ انہوں مزید بتایا کہ کم لاگت والی گاڑیوں کی امپورٹ سے عوام کو اچھی گاڑیاں مناسب قیمت پر دستیاب ہونگی۔

عہدیداران کا یہ بھی کہنا تھا کہ موجودہ وقت جو امپورٹ طریقہ کار چل رہا ہے۔ اس پالیسی سے تو گاڑی امپورٹ کرنا بہت دشواری کا کام ہے۔
‌جبکہ پیداواری یونٹس کو دیکھا جائے تو پاکستان بھر میں لاک ڈاون کے باعث مالی سال گاڑیوں کی پروڈکشن 300,000 کی بجائے صرف 150,000 تیاری کا امکان ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں