سعودی عرب: ورکرز سے دھوپ میں کام لینے پر پابندی کا اعلان

مملکت سعودی عرب میں کارکنان سے دھوپ میں کام لینے سے 15 جون سے پابندی لگائی جا رہی ہے

 سعودی وزارت افرادی قوت کے مطابق کوئی بھی ادارہ اپنے کارکن سے سے دھوپ میں کام نہیں لے سکتا یہ پابندی کارکنان کو شدید موسم کی سختی سے بچانے کے  لگائی گئی ہے  اس کا اطلاق تین ماہ کے لئے ہوگا واضح رہے کہ مملکت میں جون، جولائی اور اگست میں شدید گرمی پڑتی ہے یہ پابندی کارکنان کی صحت و سلامتی کو یقینی بنانے  کے لئے لگائی گئی ہے

وزارت نے اپنے بیان میں کہا ہے  کہ دوپہر 12 سے 3 بجے تک  کارکنان سے دھوپ میں کام نہ لیا جائے جبکہ اس سلسلے میں گیس و تیل کمپنیوں کو پابندی سے استثنیٰ حاصل ہے اسی طرح دوسرے ادارے جو اپنے ہاں اصلاح ومرمت کا شعبہ رکھتے ہیں انہیں اپنے ایمرجنسی سیکشن کے لیے اس پابندی سے چھوٹ دی گئی ہے لیکن کمپنیوں پر یہ واضح کیا گیا ہے کہ وہ کارکنان کے لیے مناسب سائے کا بندوبست کریں

وزارت افرادی قوت نے نے یہ بھی بتایا ہے ہے کہ یہ پابندی ان علاقوں کے لیے نہیں ہے جہاں شدید گرمی نہیں پڑتی اور موسم معتدل رہتا ہے اور کارکنان کی صحت کے لیے لئے دھوپ مضر نہیں ہے 

اپنا تبصرہ بھیجیں