Connect with us

ٹیکنالوجی

اسپیس واک کے دوران خلاباز سے آئینہ خلا میں کھو گیا ہے، ناسا

امریکی خلائی تحقیقاتی ادارے ناسا کے مطابق زمین سے تقریبا چار سو کلومیٹر دور انٹرنیشنل سپیس سٹیشن پر چہل قدمی کے دوران خلا باز سے حادثاتی طور پر ایک چھوٹا آئینہ خلا میں گر گیا ہے- تفصیلات کے مطابق کمانڈر کرس کسیڈی بین الاقوامی سپیس اسٹیشن پر بیٹریوں کی تبدیلی کے لیے خلا میں داخل ہوتے وقت آئینے پر کنٹرول برقرار نہ رکھ سکے اور وہ ایک فٹ فی سیکنڈ کی رفتار سے تیرتا ہوا خلا میں دور چلا گیا ہے- یہ آئینہ خلاباز اپنی کلائیوں پر پہنتے ہیں ہیں تاکہ وہ اپنے خلائی ہلمٹ کے باہر ہر چیز وں کو اچھے سے دیکھ سکیں اس آئینے کی لمبائی پانچ انچ اور چوڑائی تین انچ بتائی گئی ہے اور فریم سمیت اس کا وزن بمشکل ایک پاؤنڈ کا دسواں حصہ بنتا ہے-

یہ آئینہ اب اس خلائی کچرے کا حصہ بن گیا ہے جو کہ فاضل دھات کے ٹکڑوں اور بے کار سیٹلائٹ پر مشتمل ہے ناسا کے مطابق  یہ آئینہ  خلا بازوں اور اسٹیشن کے لیے خطرناک نہیں ہے دونوں خلابازوں نے اپنی سی کوشش کی تھی تاکہ آئینہ خلا میں گم ہو سکے لیکن وہ اس کوشش میں کامیاب نہیں ہو سکے اور انہوں نے بغیر کسی حادثے کے اپنی خلائی چہل قدمی پوری کر لی ہے-

واضح رہے کہ ناسا کے مطابق اس چہل قدمی کا مقصد خلائی اسٹیشن کے باہر لگی بیٹریوں کو تبدیل کرنا تھا کہ جس کی مدد سے سے رات کے وقت سٹیشن کو توانائی مہیا کی جاتی ہے-

جبکہ اس سے پہلے یہ دونوں خلاباز امریکی نجی کمپنی اسپیس ایکس کے ڈریگن کیپسول کے ساتھ تاریخ رقم کرتے ہوئے بین الاقوامی خلائی سٹیشن پر پہنچے تھے اور یہ دونوں خلابازوں کی ساتویں خلائی واک ہے 

Click to comment

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *