سعودی کسٹم حکام سونگھنے والے کتوں سے کووڈ 19 سے متاثرہ افراد کا سرا‏غ لگائیں گے-

سعودی کسٹم حکام نے ریاست میں داخلے کی بندرگاہوں پر کورونا وائرس سے متاثرہ افراد کا پتہ لگانے کے لئے سونگھنے والے کتوں کی مدد لی جائے گی۔

سعودی کسٹم میں نیشنل سینٹر فار لیونگ مینز کے چیف عبد اللہ آل سلیم کے مطابق ابتدائی طور پر سونگھنے والے کتوں کو وائرس کا پتہ لگانے کے لئے تربیت دی گئی ہے

انہوں نے العربیہ ٹی وی کو بتایا کہ اس کے مثبت اور حوصلہ افزا نتائج برآمد ہوئے۔ تربیت کے دوران کامیابیوں کی شرح 80 فیصد سے تجاوز کر چکی ہے


عہدیدار نے مزید کہا کہ کتوں کو بدبو کے بہت چھوٹے ذرات کو پہچاننے کی تربیت دی گئی ہے۔ جب کسی متاثرہ شخص کو پہچانا جاتا ہے تو اس کا مطلب انفیکشن کی تصدیق نہیں ہوتا ہے بلکہ یہ محض ایک شک ہوتا ہے۔ تصدیق صحت وزارت صحت میں لیب امتحان کے ذریعہ کی جاتی ہے۔ مسافر کے ٹرمینل میں داخل ہونے سے قبل یہ محض ایک بچاؤ اقدام ہے۔

آل سلیم نے بتایا کہ مشن کے لئے تربیت یافتہ کتے دوستانہ اور پرامن ہیں۔ “وہ کسی بھی حالت میں جارحانہ نہیں ہوسکتے ہیں یا کسی شخص کو چھو سکتے ہیں۔ وہ مسافروں کے ممکنہ کورونا وائرس کے انفیکشن کا اشارہ کرتے ہوئے قریب آکر صرف بیٹھ جاتے ہیں۔

سعودی کسٹمز نے اپنے ٹویٹر اکاؤنٹ پر بتایا کہ کتوں میں عمدہ فٹنس اور چستی ہے۔ ایسے کتوں میں 125 ملین سے زیادہ بو کے خلیے ہیں اور وہ زمین میں 40 فٹ گہرائیوں سے بھی سونگھ سکتے ہیں-

اپنا تبصرہ بھیجیں