Connect with us

اہم خبریں

تاریخی اسرائیلی پرواز یو اے ای میں لینڈ کر گئی

اسرائیل کے شہر تل ابیب سے اڑان بھرنے ہونے والی ‘تاریخی پرواز’ متحدہ عرب امارات کے شہر ابوظہبی کے ایئرپورٹ پر لینڈ کر گئی ہے۔

اسرائیل کی قومی ایئر لائن ای ون اے ون کی فلائٹ 971 نے تل ابیب کے بن گورین ہوائی اڈے سے پیر کو پرواز بھری تھی۔

اس جہاز میں امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے داماد اور وائٹ ہاؤس کے مشیر جیرڈ کشنر، امریکی قومی سلامتی کے مشیر رابرٹ اوبرائن اور اسرائیلی قومی سلامتی کے مشیر میر بن شبت سمیت کئی اسرائیلی اور امریکی عہدیدار سوار تھے۔

امریکہ کی معاونت سے متحدہ عرب امارات اور اسرائیل کے درمیان تعلقات معمول پر لانے کے معاہدے کے بعد پیر کو دونوں ملکوں کے درمیان یہ پہلی پرواز ہے، جس سے خطے میں امن کی امیدیں وابستہ کی جا رہی ہیں۔

خبر رساں ادارے اے ایف پی کے مطابق امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے داماد جیرڈ کشنر نے روانگی کے وقت کہا: ‘یہ ایک تاریخی پرواز ہے۔ ہمیں امید ہے کہ یہ مشرق وسطیٰ اور اس سے باہر ایک تاریخی سفر کا آغاز کرے گی۔ مستقبل طے کرنے کے لیے ماضی کا فیصلہ ضروری نہیں ہے۔ میرا ماننا ہے کہ دنیا بھر میں اس خطے میں امن اور استحکام ممکن ہے۔’

متحدہ عرب امارات آنے والے اس اسرائیلی جہاز کے کاک پٹ پر انگریزی، عبرانی اور عربی زبان میں لفظ ‘امن’ درج کیا گیا ہے۔

یہ پیش رفت ایک ایسے وقت میں ہوئی ہے جب متحدہ عرب امارات اور اسرائیل کے درمیان 13 اگست کو تعلقات معمول پر لانے کے معاہدے کا اعلان ہوا تھا، جس کا اعلان امریکی صدر ٹرمپ نے کیا تھا۔

Click to comment

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *