لیبیا کے نئے عبوری وزیر اعظم نے حکومت کی سربراہی کا حلف لے لیا۔

لیبیا کے نئے عبوری وزیر اعظم عبد الحمید دبیبہ نے پیر کے روز حلف اٹھایا کہ وہ جنگ سے متاثرہ ملک میں برسوں کے انتشار اور تقسیم کے بعد دسمبر میں ہونے والے انتخابات میں منتقلی کی قیادت کریں ۔
سنہ 2011 میں نیٹو کی حمایت یافتہ بغاوت میں ڈکٹیٹر معمر قذافی کا تختہ پلٹنے اور ان کی ہلاکت کے بعد شمالی افریقی قوم تنازعہ میں آگئی تھی ، جس کے نتیجے میں متعدد قوتیں اقتدار کے حصول کے لئے کوشاں تھیں۔
اقوام متحدہ کے زیر نگرانی عمل کا مقصد ملک کو متحد کرنا اور ملک کے مشرق اور مغرب میں حریف انتظامیہ کے مابین اکتوبر میں ہونے والی جنگ بندی پر کام کرنا ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں